لنگر خانوں کو نہیں چلایا جا سکتا، وزیر اعظم شہباز شریف

وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ اپنے پاؤں پر کھڑے ہونے کی کوشش کریں گے، لنگر خانوں کو نہیں چلایا جا سکتا، جس نے لنگر خانے بنانے ہیں وہ حکومت میں نہ آئے، حکومت کا کام روزگار کی فراہمی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اپنے بیٹے کو وزیر اعلیٰ بنانے کا کوئی شوق نہیں تھا، ہم نے پرویز الہٰی کو وزارت اعلیٰ کی آفر کی تھی، جب وہ اپنی بات سے پھر گئے تو پارٹی نے حمزہ کو نامزد کر دیا۔

شہباز شریف نے کہا کہ ایک دو دن میں کابینہ مکمل کر لی جائے گی، عمران خان نے پہلے توشہ خان کا قانون تبدیل کیا، توشہ خان میں ہار، انگھوٹی اور گھڑی کم قیمت پر خرید کر دبئی میں فروخت کر دی۔

وزیر اعظم نے کہا کہ وزارت توانائی سے بجلی کے کارخانوں کو ایندھن کی فراہمی متعلق پوچھا، وزارت توانائی کے افسر پہلے آئیں بائیں شائیں کرتے رہے پھر کہا وہ نیب کے خوف کی وجہ سے فیصلہ نہیں کر پا رہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ ہیلتھ کارڈ پروگرام نواز شریف کا دیا ہوا ہے، 2018 میں ہماری حکومت ہوتی تو ہیلٹھ کارڈ پورے ملک میں دے چکے ہوتے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں