ہارٹ اٹیک کا ڈرامہ رچا کر ریسٹورینٹس سے مفت کھانا کھانے والا شخص پکڑا گیا

ہارٹ اٹیک کا ڈرامہ رچا کر ریسٹورینٹس سے مفت کھانا کھانے والا شخص پکڑا گیا

کوسٹا بلانکا: سپین میں ایک شخص نے اپنی مکاری سے 20 ریسٹورینٹس کو چونا لگا کر مفت کھانا کھا لیا۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق سپین میں ایک لتھوانیا کے شہری کو ریسٹورینٹس میں مبینہ طور پر بل کی ادائیگی سے بچنے پر گرفتار کیا گیا ہے۔50 سالہ نامعلوم شخص نے ملک بھر کے 20 ریسٹورینٹس میں ہارٹ اٹیک کا ڈرامہ رچا کر مفت کھانا کھایا جس پر سیکورٹی حکام نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کیا۔
دل کا مریض ہونے کا دعویٰ کر کے، کھانے اور مشروبات کا آرڈر دینے کے بعد ملزم دل کا دورہ پڑنے کا زبردست ناٹک کرتا، اپنے سینے کو پکڑ کر فرش پر بے ہوش ہونے کا بہانہ کرتا۔تاہم اس کی یہ چال اس وقت نظروں میں آگئی جب ایک ریسٹورنٹ کے مالک نے اس شخص کی چالاکی کو بھانپ لیا اور اس کی تصویر دیگر مقامی ریسٹورنٹس کو بھیج کر انہیں آگاہ کیا کہ وہ اس کے ہارٹ اٹیک کے ڈرامے سے ذرا بھی دھوکا نہ کھائیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں