پاکستان: اعلیٰ تعلیم میں بہتری کے منصوبے کا آغاز

امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی کے اشتراک سے پاکستان میں اعلیٰ تعلیم کے نظام میں بہتری لانے اور نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے لیے پانچ سالہ منصوبے کا آغاز کر دیا گیا۔

امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی کے اشتراک سے تقریب کے شرکا ء کا یو ایس اے آئی ڈی پاکستان کی مشن ڈائریکٹر جولی کونن کے ہمراہ گروپ فوٹو

امریکہ اور پاکستان کے 75 سالہ سفارتی تعلقات مکمل ہونے کے موقع پر اعلی تعلیم میں بہتری کے منصوبے کا آغاز کیا گیا، یو ایس اے آئی ڈی پاکستان کے ساتھ ایک کروڑ نوے لاکھ ڈالر مالیت کے پانچ سالہ منصوبے پر کام کیا گیا،اس پروگرام میں پاکستان میں خواتین کی 5 جبکہ مجموعی طور پر 15 سرکاری  یونیورسٹیز مستفید ہوں گے ۔

 اس موقع پر یو ایس اے آئی ڈی پاکستان کی مشن ڈائریکٹر جولی کونن کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ ذہین افراد کو ملازمت کی تلاش اور روزگار کی فراہمی میں مدد دے گا، امریکی فلاحی ادارے کو ہائر ایجوکیشن کمیشن کے ساتھ اس منصوبے میں تعاون پر فخر ہے ۔

یو ایس اے آئی ڈی پاکستان کی مشن ڈائریکٹر جولی کونن تقریب سے خطاب کرتے ہوئے

 چیئرمین ایچ ای سی طارق بنوری نے کہا کہ امریکی ادارے کی جانب سے ملک بھر کی یونیورسٹیوں کے مختلف شعبوں میں تعاون کیا گیا،اعلی تعلیم کے شعبے میں تعاون دو طرفہ شراکت داری کی بہترین مثال ہے۔

 چیئرمین ایچ ای سی طارق بنوری خطاب کر رہے ہیں
50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں